29 November 2022
  • 1:31 pm Aftab Poonawala, accused of murdering Shraddha Walkar, to undergo narco test on Thursday
  • 1:31 pm Watch: Disturbed by human presence, tiger charges towards tourist vehicle during safari
  • 1:30 pm Kerala Lottery 2022: Sthree Sakthi SS-341 results to release at 3 pm, first prize Rs 75 lakh
  • 1:18 pm Giorgia Andriani spills wedding plans with Arbaaz Khan
  • 1:18 pm Pakistan gets $500 million from AIIB
Choose Language
 Edit Translation
My-Ads
Spread the News

امریکا میں چرچ کے باہر ایک شخص نے فائرنگ کرکے 2 خواتین کو قتل کردیا، ملزم نے خود کو گولی مار کر اپنی زندگی کا بھی خاتمہ کرلیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق فائرنگ کا واقعہ امریکی ریاست آئیوا کے شہر ایمس میں ایک چرچ کے پارکنگ ایریا میں اس وقت پیش آیا جب وہاں مذہبی تقریبات جاری تھیں۔

پولیس کو جائے وقوعہ سے 3 افراد کی لاشیں ملیں، فی الوقت مرنے والوں کی شناخت اور ان کے آپس میں تعلق کے بارے میں نہیں بتایا جا سکتا۔

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کی تمام پہلوؤں سے تحقیقاتی جاری ہیں، یہ پتہ لگانے کی کوشش کی جارہی ہے کہ یہ ٹارگٹڈ حملہ یا ذاتی دشمنی کا شاخسانہ تھا۔

آئیوا میں فائرنگ سے کچھ دیر قبل امریکی صدر جوبائیڈن نے اپنے خطاب میں نیویارک، ٹیکساس اور اوکلاہوما میں فائرنگ کے واقعات کی مذمت کی تھی۔

انہوں نے کانگریس پر زور دیا تھا کہ خودکار ہتھیاروں پر پابندی لگائی جائے، خریداروں کی تصدیق کی جائے اور فائرنگ کے واقعات پر قابو پانے کیلئے دیگر اقدامات اٹھائے جائیں۔

پچھلے چند ہفتوں کے دوران امریکا میں اس طرح کے فائرنگ کے واقعات میں 35 سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

Abdul Gh Lone

RELATED ARTICLES