29 November 2022
  • 1:31 pm Aftab Poonawala, accused of murdering Shraddha Walkar, to undergo narco test on Thursday
  • 1:31 pm Watch: Disturbed by human presence, tiger charges towards tourist vehicle during safari
  • 1:30 pm Kerala Lottery 2022: Sthree Sakthi SS-341 results to release at 3 pm, first prize Rs 75 lakh
  • 1:18 pm Giorgia Andriani spills wedding plans with Arbaaz Khan
  • 1:18 pm Pakistan gets $500 million from AIIB
Choose Language
 Edit Translation
My-Ads
Spread the News

ایف آئی اے نے مونس الہی کی ضمانت منظوری کا حکم ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

ایف آئی اے منی لانڈرنگ کے مقدمے میں بڑی پیش رفت سامنے آئی ہے، بینکنگ جرائم کورٹ نے ق لیگ کے رہنما سابق وفاقی وزیرمونس الہی کی عبوری ضمانت منظور کی تھی، تاہم ایف آئی اے نے مؤنس الہیٰ کی ضمانت منظوری کا حکم ہائی کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس حوالے سے ایف آئی اے نے درخواست کا متن تیار کرکے ڈپٹی اٹارنی جنرل کے آفس میں ارسال کردیا ہے، ایف آئی اے نے مؤقف اختیار کیا کہ مونس الہی کی ضمانت حقائق کے برعکس منظور ہوئی۔ مزید تحقیقات کے لیےمونس الہی کی گرفتاری مطلوب ہے۔

درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ عدالت مونس الہی کی عبوری ضمانت کے حکم کو کالعدم قرار دے۔

ایف آئی اے اور ڈپٹی اٹارنی جنرل کی حتمی منظوری کے بعد درخواست لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی جائے گی۔

مونس الہیٰ کے خلاف رواں ماہ 15 جون کو ایف آئی اے لاہور نے منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا تھا۔

کیس کا پس منظر

مونس الہیٰ ، نواز بھٹی، مظہر عباس، شہریار، جاوید، وجیہہ اور محمد خان بھٹی پر کروڑوں روپے کی منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔

ایف آئی اے کی جانب سے تمام ملزمان کے خلاف 24 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی تحقیقات جاری ہیں، اور ایف آئی اے نے ان کے خلاف 15 جون کو منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا تھا، جس کے مرکزی ملزم چوہدری مونس الٰہی ہیں۔

ایف آئی اے ذرائع کے مطابق مونس الہٰی نے ہنڈی کے ذریعے رقم بیرون ملک بھجوائیں اور بیرون ملک جائیدادیں بنائیں۔

ایف آئی اے نے ایم این اے مونس الہٰی اور ان کے خاندان کے لین دین کی جانچ کے بعد حکومت کو شواہد سے آگاہ کردیا گیا ہے۔

Abdul Gh Lone

RELATED ARTICLES